پاکستان کا مسئلہ فلسطین کی کاوشوں پر اسرائیل بلبلا اٹھا

اسرائیلی فوج نے مسجد اقصی پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں یہ کشیدگی کا آغاز ہوا
غزہ میں اسرائیلی بمباری سے ہونے والی اموات کی تعداد 292 ہوگئی جبکہ 1990 کے قریب افراد ہوئے

اس کے علاوہ غزہ میں بمباری کےنتیجے میں الجزیرہ، ایسوسیٹڈ پریس اور مڈل ایسٹ آئی کے میڈیا ہاؤسز تباہ کیے جاچکے ہیں

اسرائیلی بربریت گیارہ روز تک جاری رہی جس میں سینکڑوں شہادتیں ہوئیں

پاکستان کی جانب سے اہم قدم اٹھایا گیا اور اور اسرائیلی جارحیت پر دو ٹوک موقف اپناتے ہوئے دنیا کے سامنے اسرائیلی جنگی جرائم کو بے نقاب کیا جس پر نہ صرف عالمی میڈیا بلکہ مسلم ممالک سمیت دیگر ممالک کے رہنماؤں نے بھی فلسطینیوں پر اسرائیلی بربریت کی شدید مذمت کی۔ پاکستان کی جانب سے فلسطینیوں پر جاری اسرائیلی ظلم و بربریت کو دنیا کے سامنے لانے کی کوششیں کی گئیں جس سے اسرائیل بلبلا اٹھا

وزیر خارجہ کی کاوشوں سے اسرائیل کو شدید دھچکا پہنچا اور مجبوراً اسرائیلی وزیراعظم نے سیز فائر کا اعلان کیا۔

پاکستانی حکومت کی جانب سے مسئلہ فلسطین پر بھر پور آواز اٹھانا اسرائیلی حکومت کو ایک آنکھ نہ بھایا جس پر اب اسرائیل نے بھی بھارت کی طرح پاکستان کے خلاف زہر اگلنا شروع کردیا ہے۔

اسرائیلی وزارت خارجہ کے ڈائریکٹر جنرل ایلون اشیز نے ٹوئٹر پر پاکستان کے خلاف زہر اگلتے ہوئے کہا کہ انسانی حقوق کا چیمپئین پاکستان خود شیشے کے گھر میں رہتا ہے، اقوام متحدہ میں مشرقی وسطیٰ کی واحد جمہوریت کو درس دے رہا ہے، یہ منافقت کی اعلیٰ مثال ہے۔

انہوں نے پاکستانی وزارت خارجہ کے آفیشل اکاؤنٹ پر اسرائیل کے خلاف اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کے اجلاس سے متعلق کی گئی ٹوئٹ پر جواب دیتے ہوئے یہ ٹوئٹ کی تھی جب کہ اس بیان کو خود اسرائیلی وزارت خارجہ نے بھی ری ٹوئٹ کیا ہے۔

قومی اسمبلی کا اجلاس : مظلوم فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کی قرارداد متقفہ طور پر منظور

آج اسد قیصر کی زیر صدارت قومی اسمبلی کا اہم اجلاس ہوا اجلاس میں مظلوم فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کی قرارداد متقفہ طور پر منظور کر لی گئی ہے۔

قرارداد وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کی جانب سے پیش کی گئی قرارداد میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ سیکیورٹی کونسل اسرائیلی جارحیت فوری رکوانے کے لیے اقدامات کرے۔

قرارداد میںفلسطینیوں کے لیے آزاد اور خود مختار ریاست کا مطالبہ کیا گیا اور مسجد الاقصیٰ پر اسرائیلی حملے کی شدید مذمت کی گئی

ذرائع کے مطابق پاکستان اور ترکی نے اسرائیلی مظالم کے خلاف اقوام متحدہ میں جانے کا فیصلہ کیا ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بتایا کہ وہ آج اقوام متحدہ اجلاس میں شرکت کیلئے روانہ ہونگے۔

انہوں نے ایوان سے وعدہ کیا کہ ہم مسئلہ فلسطین اور مسئلہ کشمیر پر کبھی آنچ نہیں آنے دیں گے۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ مانتا ہوں راستے کٹھن ہے، عالمی دنیا کا دہرا معیار ہے لیکن سچائی میں بڑا وزن ہوتا ہے۔

اپوزشن لیڈر میاں شہباز شریف نے اجلاس کے دوران کہا کہ کہ 1948ء سے لے کر آج تک فلسطینی ظلم برداشت کررہے ہیں مشرقی یروشلم میں انتہا پسند یہودیوں نے مارچ کیا، پوری دنیا نے یہ دلخراش مناظر دیکھے۔

انہوں نے کہا کہ میں آج یہاں اپوزیشن کے خلاف ظلم کا ذکر نہیں کروں گا۔ کیونکہ آج ہم نے اسرائیل کے مظالم کی بات کرنی ہے اسرائیل کی بدترین سفاکی زوروں پر ہے۔

انکا کہنا تھا کہ ماضی میں فاشسٹ ہٹلر جہاں تھا، آج وہاں نیتن یاہو کھڑا ہے۔اسرائیلی جارحیت کے نیتجے میں درجنوں بچے اور خواتین کو شہید کیا گیا غزہ میں الجزیرہ چینل کی بلڈنگ کو گرتے دنیا نے دیکھا۔ اس طرح کی سفاکی پہلے کبھی نہیں دیکھی گئی

ان کا کہنا تھا کہ فلسطین کی دوسری نسل بدترین ظلم کا شکار ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ وزیرخارجہ اس مسئلے کو عالمی سطح پر اٹھائیں

شہباز شریف نے قومی اسمبلی کے اجلاس میں تجویز پیش کی کہ آئندہ جمعہ یوم القدس کے طور پر منایا جاۂے

ان کا کہنا تھا کی فلسطینیوں پر جو ظلم ہو رہا ہے وہ کسی سے ڈھکا چھپا نہیں ہے اسرائیل اور بھارت کے ظلم و بربریت میں بہت مماثلت ہے

انہوں نے کشمیر کے حوالے سے بات کرتے ہوۂے کہا کہ بھارت نے کشمیر میں ظلم کی انتہا کر رکھی یے مکمل لاک ڈاؤن کی صورتحال ہے ہم اس سب کی مذمت کرتے ہیں

خیال رہے کہ واضح رہے کہ گزشتہ آٹھ روز سے اسرائیل اور فلسطین کے درمیان کشیدگی شدت اختیار کرگئی ہے اسرائیلی فوج نے مسجد اقصی پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں یہ کشیدگی کا آغاز ہوا

جس کے بعد غزہ میں اسرائیلی بمباری سے ہونے والی اموات کی تعداد 192 ہوگئی جبکہ 1230 افراد زخمی ہیں۔اس کے علاوہ غزہ میں بمباری کےنتیجے میں الجزیرہ، ایسوسیٹڈ پریس اور مڈل ایسٹ آئی کے میڈیا ہاؤسز تباہ کیے جاچکے ہیں

آئندہ جمعہ یوم القدس کے طور پر منایا جاۂے ، شہباز شریف کی تجویز

شہباز شریف نے قومی اسمبلی کے اجلاس میں تجویز پیش کی کہ آئندہ جمعہ یوم القدس کے طور پر منایا جاۂے

انہوں نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے مطالبہ کیا کہ فلسطین کا مقدمہ آگے بڑھ کر لڑا جاۂے

تفصیلات کے مطابق شہباز شریف نے قومی اسمبلی کے اجلاس میں تجویز دی کہ آئندہ جمعہ یوم القدس کے طور پر منایا جاۂے انہوں نے فلسطین کے معاملے پر او آئی سی کا اجلاس بلانے کا مطالبہ بھی کیا اور مطالبہ کیا کہ فلسطین کا مقدمہ آگے بڑھ کر لڑا جاۓ

اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے کہا کہ آزاد خود مختار فلسطینی ریاست کا قیام آج تک ممکن نہ ہوا ان کا کہنا تھا کی فلسطینیوں پر جو ظلم ہو رہا ہے وہ کسی سے ڈھکا چھپا نہیں ہے اسرائیل اور بھارت کے ظلم و بربریت میں بہت مماثلت ہے انکا کہناتھا کہ فلسطین اور کشمیر میں ظلم ہورہا ہے

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ اسرائیلی حملوں کی شدید مذمت کرتے ہیں اسرائیلی فوج فلسطینیوں پر حملے کر رہی ہے انہوں نے کشمیر کے حوالے سے بات کرتے ہوۂے کہا کہ بھارت نے کشمیر میں ظلم کی انتہا کر رکھی یے مکمل لاک ڈاؤن کی صورتحال ہے ہم اس سب کی مذمت کرتے ہیں

واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے بھی اسرائیلی مظالم کے خلاف جمعہ کو یوم احتجاج منانے کا اعلان کیا تھا

خیال رہے کہ گزشتہ آٹھ روز سے اسرائیل اور فلسطین کے درمیان کشیدگی شدت اختیار کرگئی ہے اسرائیلی فوج نے مسجد اقصی پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں یہ کشیدگی کا آغاز ہوا

غزہ میں صحت کے حکام کے مطابق اتوار کے روز اسرائیلی فوج کے تازہ ترین حملوں میں 16 خواتین اور 10 بچوں سمیت مزید 42 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

جس کے بعد غزہ میں اسرائیلی بمباری سے ہونے والی اموات کی تعداد 192 ہوگئی جبکہ 1230 افراد زخمی ہیں۔

اسرائیلی مظالم : وزیراعظم کی جمعہ کے روزیوم احتجاج منانے کی ہدایت

وزیراعظم کی زیرصدارت حکومتی رہنماؤں کا اجلاس ہوا جس میں وزیراعظم نے کہا کہ فلسطین کا معاملہ ہر فارم پر اٹھایا جاۂے گا اس کے ساتھ ہی انہوں نے اسرائیل مظالم کے خلاف یوم احتجاج منانے کے لیے تیاری کی ہدایت بھی کی یوم احتجاج جمعہ کے روز منانے کی ہدایت کی گئی

وزیراعظم نے مہنگائی کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ حکومت مہنگائی میں کمی کے لیے ہر ممکن انتظامی اور پالیسی فیصلے کررہی ہے

اجلاس میں وزیراعظم کو شہباز شریف کے حوالے سے بریفنگ دی گئی وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید نے وزیراعظم کو بریفنگ دی

انہوں نے وزیراعظم کو بتایا کہ اپوزیشن لیڈر کےمعاملے پر سپریم کورٹ سے رجوع کیا ہے، شہبازشریف اس لیے بھاگنا چاہتےہیں کہ ان کے خلاف ریفرنس نہ آئے۔

جس پر وزیراعظم نے کہا کہ قومی دولت لوٹنے والوں کو چھوڑا نہیں جا سکتا شہباز شریف کے خلاف اربوں روپے کی کرپشن کے کیسز ہیں ان سے کسی سے ذاتی مسلئہ نہیں

خیال رہے کہ کچھ روز قبل میاں محمد شہباز شریف کو لاہور ہائی کورٹ میں درخواست جمع کرانے پر ضمانت دے دی گئی تھی اور بیماری کی غرض سے بیرون ملک جانے کی اجازت بھی دے دی گئی تھی

جس کے بعد سابق وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف کو بیرون ملک سفر کرنے کے لئے ایئرپورٹ پر ایف آئی اے کے اہلکاروں کی جانب سے روک دیا گیا تھا اور کہا گیا تھا کہ ابھی تک آپ کے اوپر لگے ہوئے چارجز کو نہیں اٹھایا گیا ہے اور ہمیں آپ کے بیرون ملک جانے کے متعلق کوئی حکم نہیں اور اب شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں ڈال دیا گیا جس کے لیے شہباز شریف نے عدالت سے رجوع کیا ہے

وہ پانچ جانور جنہیں ہم دوبارہ کبھی دیکھ نہیں پائیں گے

وہ پانچ جانور جنہیں ہم دوبارہ کبھی دیکھ نہیں پائیں گے

کہا جاتا ہے کہ تقریبا ہر سال 10 ہزار انواع ہمیشہ کے لیے ختم ہو جاتی ہیں لیکن یہ بھی حقیقت ہے کہ .معدومیت تشویشناک حد تک معمول سے ہوتی ہے

آئیے ہم ان جانوروں کے بارے میں بات کرتے ہیں جو اب معدوم ہوچکے ہیں

1- مس والڈرن کاریئہ کولوبس

یہ ایک درمیانے سائز کا سرخ بالوں والا بندر ہے جسے 2000 کی دہائی کے شروع سے معدوم سمجھا جاتا ہے اس جانور کی حیرت انگیز بات ہے کہ کیونکہ اس کے انگوٹھے نہیں ہوا کرتے یہ فطرتاً آیک نرم مزاج جانور ہے بڑے گروہوں کی صورت اونچے درختوں پر رہتا ہے جب جنگلات سکڑنے لگے تو ریڈ کولوبس کے گروہ بھی چھوٹے ہوتے گئے جس سے ان کے لیے شکاری جانوروں کا خطرہ بھی بڑھا اور آپس میں افزائشِ نسل کے سبب جینیاتی کمزوریاں بھی فروغ پانے لگیں۔

2: یینگتسی ریور ڈولفن (چین)

چین کی یینگتسی ریور ڈولفن دنیا کے قدیم ترین ممالیہ جانوروں میں سے ایک ہے

یہ سنہ 2006 میں معدوم قرار دی گئی اس کے سادہ جسم کے نیچے انتہائی ارتقا یافتہ ایکو لوکیشن سسٹم موجود تھا جو کہ دیگر ڈولفنز کے مقابلے میں کہیں زیادہ برتر تھا۔ اس کا یہ نظام اک اکلوتی مچھلی تک کی لوکیشن معلوم کر سکتی تھی۔

مگر یہ پانی میں انسان کی پھیلائی گئی آلودگی سے گھبرا گئ اور شکار ہوجانے والی یینگتسی ریور ڈولفن کے پاس بقا کے لیے کوئی آپشن موجود نہیں تھا۔

3: ایلابامہ پِگٹو (امریکہ)

یہ معصوم سا نظر آنے والا سیپ ہے جو کہ 2006 تک امریکی ریاست ایلابامہ کے دریائے موبائل میں پایا جاتاتھا

اسے یہ نام اس لیے دیا گیا کیونکہ یہ سور کے پیر جیسا دکھائی دیتا ہے

اسکی خاصیت تھی کہ یہ آلودہ دریا کا پانی فلٹر کیا کرتا۔ مگر آلودگی پھر اتنی زیادہ ہوگئی کہ پگٹو اسے مزید نہ جھیل پایا۔

4: ڈوڈو (ماریشیس)

یہ سب سے مشہور پرندہ ہے ڈائنوسارز کے علاوہ ڈوڈو ایک طویل عرصے سے معدوم ہو چکی ایسی نسل ہے جسے سبھی جانتے ہیں۔

یہ کارٹون کردار ڈیفی ڈک جیسا دکھائی دینے والا پرندہ ہے یہ جزیرہ ماریشیس پر رہا کرتا تھا یہ پرندہ اڑنے کی صلاحیت نہیں رکھتا تھا

جب انسان ماریشیس تک پہنچے تو اپنے ساتھ دیگر جانور اور گوشت کے لیے اپنی بھوک بھی اپنے ہمراہ لے کر آئے۔ ان کے سامنے ڈوڈو زیادہ عرصے تک باقی نہ رہ سکے۔

5: کواگا (جنوبی افریقہ)

آخری مادہ کواگا 1883 میں ہلاک ہوئی

کواگاایک غیر معمولی خوبصورت جانور ہے اور یہی خوبی ہی اس کی معدومیت کی وجہ بنی۔ اس دلآویز افریقی جانور کا سامنے کا آدھا حصہ زیبرا کی طرح دھاری دار تھا مگر یہ دھاریاں پیچھے کی جانب مٹتی مٹتی ختم ہوجاتیں اور پچھلا حصہ گھوڑے کی طرح سادہ اور بھورا ہوتا۔

اس کی حیران کُن وضع کی وجہ سے اس کا اس قدر غیر قانونی شکار کیا گیا کہ یہ معدوم ہوگئے۔

ان میں سے آخری 1880 کی دہائی میں قید میں ہلاک ہوا۔

6: وائٹ ٹیل ایگل (برطانیہ)

تقریباً دو میٹر تک پروں کا پھیلاؤ رکھنے والا یہ شاندار پرندہ ہے جس کا برطانیہ میں کئی سالوں تک بے رحمانہ انداز میں شکار کیا گیا۔ درحقیقت اسے مارنے کی حوصلہ افزائی کی جاتی۔

مگر خوش قسمتی سے سفید دُم والے عقاب یورپ میں دیگر جگہوں پر بستے تھے اور انھیں برطانیہ میں دوبارہ متعارف کروانا ممکن ہو سکا۔

مگر تمام جانور اتنے خوش نصیب نہیں ہوتے۔

اسرائیلی مظالم اجاگر کرنےپر فیسبک پیج بلاک کر دیا گیا

فیس بک نے فلسطین کی اپڈیٹ دینے والے فیس بک پیج کو بلاک کر دیا

ذرائع کے مطابق فیس بک نے فلسطین میں صورتحال کی اپڈیٹ دینے والے گروپ کو بند کر دیا ہے اک بلاگر بورا السبت نے ٹوئیٹ میں لکھا ہے کہ فیس بک نے سیف شیخ جارج گروپ نام کے پیج کو بلاک کر دیا ہے

تفصیلات کے مطابق اس پیج کے ذریعے فلسطینیوں کو بڑی تعداد میں سوشل اپڈیٹس مل رہی تھیں جسے اب بلاک کر دیا گیا ہے
فیس بک انتظامیہ نے پیج بلاک کرنے کی وجہ یہ بتائی ہے کہ انہوں نے کمیونٹی گائیڈلائنز کی خلاف ورزی کی ہے

واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے اسرائیل کی جانب سے القدس میں فائرنگ کی گئی جس کے جواب میں غزہ نے اسرائیل پر راکٹ داغے تھے۔

اسرائیلی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ اس نے پیر کی شام سے غزہ پر 600 سے زیادہ فضائی حملے کئے جبکہ حماس نے اسرائیل پر 1600 سے زائد راکٹ داغے تھے

اسرائیلی فضائی حملوں میں شہید فلسطینیوں کی تعداد109 سے تجاوز کرچکی ہے، شہداء میں 28 بچے اور 15 خواتین بھی شامل ہیں جبکہ 621 افراد زخمی ہوگئے ہیں

چاند کا نظر آنا ممکن نہیں ہے ، فواد چوہدری

فواد چوہدری نے ٹوئیٹر پر ٹویٹ کی جس میں انہوں نے لکھا کہ چاند کا نظر آنا ممکن ہی نہیں ہے

تفصیلات کے مطابق فواد چوہدری نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ اس وقت چاند کی عمر 13 گھنٹے 42 منٹ ہے لہذا آج چاند نظر آنا ممکن نہیں

انہوں نے مزید بھی کہا کہ جن لوگوں نے سعودیہ کے ساتھ عید منانی ہے یہ ان کی آپشن ہے لیکن جھوٹ بول کر رمضان کا اختتام نہ کیا جائے صرف اتنا کہیں کہ ہم نے عید افغانستان اور سعودی عرب کے ساتھ منانی ہے

دوسری جانب مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس آج ہو رہا ہے ذرائع کے مطابق عیدالفطر کی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس آج شروع ہو گیا ہے جس کی سربراہی مولانا عبدالخبیر کر رہے ہیں

اجلاس میں وزارت سائنس اور محکمہ موسمیات کے نمائندے بھی شریک ہیں آج مطلع ابر آلود ہے جس کی وجہ سے چاند نظر نہیں آ رہا تاہم ماہ شوال کے چاند کی پیمائش 12 مئی کی رات 12 بج کر 1 منٹ پر ہو چکی ہے اب کمیٹی شہادتوں کی بنیاد پر فیصلہ کرے گی اگر شہادتیں موصول ہوئیں تو کچھ ہی دیر میں فیصلہ کر لیا جائے گا