بینک میں موجود رقم کو محفوظ کیسے بنایا جائے, آئیے جانتے ہیں

بینک میں موجود رقم کو محفوظ بنانا سیکھیں آن لائن بینکنگ نے ہماری زندگی میں آسانی پیدا کرنے کے ساتھ ساتھ بینک اکاؤنٹ میں رکھی رقم کوغیر محفوظ بھی بنادیا ہے۔

اگر آپ نے تھوڑی سی لاپرواہی کی توچند ہی لمحوں میں آپ بھاری رقم سے محروم ہو سکتے ہیں۔اس کا حل ذیل میں موجود ہے جو کہ آپکو ہیکرز اور فراڈی افراد کی دھوکہ دہی سے محفوط رکھ سکتا ہے

1- موبائل ایپلی کیشنز کو غیر ضروری رسائی مت دیں

کسی بھی ایپ کو فون کے ڈیٹا تک رسائی مت دیں اجازت دینے سے پہلے اچھی اچھی طرح پڑھ لیں

2- آن لائن بینکنگ کے لیے عوامی وائی فائی کا استعمال ہرگز مت کریں

عوامی وائی فائی غیر محفوظ ہوتے ہیں ہیکرز اسکے ذریعے باآسانی آپکی معلومات چرا سکتےہیں بہت سے لوگ مفت وائی فائی کے لیے شاپنگ مال میں گھنٹوں بیٹھے رہتے ہیں یاد رکھیں مفت وائی فائی ناصرف آپ کے نجی ڈیٹا، سوشل میڈیا کے لیے نقصان دہ ہے بلکہ یہ آپ کو بینک میں موجود بھاری رقوم سے محروم کر سکتی ہےکبھی بھی بینک کی آن لائن ٹرانزیکشنز کے لیے مفت وائی فائی استعمال مت کریں

3- پاسورڈ مشکل رکھیں

بینک کی ایپلی کیشن کا پاس ورڈ کبھی آسان نہیں رکھیں۔ آپ کا پاسورڈ ایک اسمال، ایک کیپٹل، نمبر، علامات( مثلا Mk6595#$) پر مشتمل ہونا چاہیے. اپنے پاس ورڈ کو باقاعدگی سے ہر تین چار ماہ بعد تبدیل بھی کرتے رہیئے۔

4- عوامی چارجنگ بوتھ پر موبائل چارج مت کریں

ہمیشہ اپنی چارجنگ کیبل ساتھ رکھیں اور اسی کی مدد سے عوامی مقامات پر لگے چارجنگ اسٹیشن پر اپنے موبائل کو چارج کریں۔

5- گوگل اسٹور کے علاوہ کسی اور جگہ سے موبائل ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ مت کریں

موبائل ایپلی کیشن کو ہمیشہ گوگل یا ایپل کے اسٹور سے ہی ڈاؤن لوڈ کریں۔

6-سیکیورٹی اپ ڈیٹ کو نظر انداز مت کریں

اپنے اسمارٹ فون پر سیکورٹی اپ ڈیٹ کو کبھی نظر انداز مت کریں، سافٹ ویئر اپ ڈیٹ سے آپ کے فون میں موجود بگس کا خطرہ کم ہوجاتا ہے

7- بینک اورادائیگیوں سے متعلق ای میل اورمیسیجز پر کلک مت کریں

کبھی بھی ای میل، مسیجز یا فون کالز پر اپنی نجی معلومات فراہم نہ کریں۔

8- سوشل میڈیا پر نجی معلومات کا اندراج مت کریں

سوشل میڈیا یا ایس ایم ایس پر اپنی نجی معلومات جیسے کہ والدہ کا نام، پن نمبر، کارڈ نمبر یا کارڈ کی پشت پر دیا گیا تین ہندسوں پر مشتمل سیکیورٹی کوڈ کسی کو نہ دیں۔

حیرت انگیزانکشاف، قرآن پاک سے موتیے کا علاج دریافت کرلیا گیا

حیرت انگیزانکشاف قرآن پاک سے موتیے کا علاج دریافت کرلیا گیا

سویزر لینڈ کی فیکٹری جوکہ دوا تیار کرتی ہے اس میں اک دوا تیار کی گئی ہے جسے قرآن کی دوا کا نام دیا گیا ہے یہ دوا بنیادی طور پر موتیے کے لیے موثر ہے موتیے کی سرجری میں بھی مفید ہے

تفصیلات کے مطابق یہ دوا جو کہ قطروں کی شکل میں تیار کی گئی ہے اسے ایک مصری ڈاکٹر عبدالباسط محمد نے بہترین تحقیق کے بعد تیار کیا ہے اس کی حیرت انگیز بات یہ ہے کہ یہ پسینے کے غدود سے بنائی گئی یے اور یہ دوا یورپ اور امریکہ سے رجسٹرڈ ہو گئی ہے

کہا جا رہا ہے کہ اس دوا کی کامیابی 99 فیصد ممکن ہے اور اس کے متعلق رپورٹ بھی شائع ہو چکی ہے کہ آنکھوں میں ڈالنے والے قطرے بناۓ جا چکے ہیں یہ سب کس طرح ہوا . یہ ایک خوبصورت واقعہ ہے آئیے جانتے ہیں

ڈاکٹر عبدالباسط کہتے ہیں کہ ایک صبح میں سورۃ یوسف پڑھ رہا تھا جب آیت نمبر 84 نےانکی توجہ کگھینچ لی آیت کا ترجمہ یہ ہے

“ سیدنا یعقوب علیہ السلام اپنے بیٹے یوسف علیہ السلام کے غم میں رو رو کر آنکھیں ضاٸع کر لیں اور آنکھیں بالکل سفید ہو گٸی ان میں موتیا اتر آیا، اور نظر ختم ہو گٸی- اور جب سیدنا یوسف علیہ السلام کا کرتا ان کی آنکھوں کو لگایا گیا تو ان کی آنکھیں ٹھیک ہو گٸیں ان کا موتیا ٹھیک ہو گیا اور نظر واپس آ گٸی”

یہاں آ کر انہیں علاج مل گیا جس کے ذریعے انہوں نے دوا تیار کرلی ہے

اپنے بہترین نتایج اور تحقیق کے بعد ایک سوئس کمپنی کے ساتھ انہوں نے معاہدہ کیا ہے جو اس دوا کو مارکیٹ کرے گی اور اس کا نام ہوگا قرآن کی دوا، اللہ تعالیٰ فرماتا ہے: ہم نے قرآن کو زمین پر بھیجا جو کہ شفاء ہے اور رحمت ہے مگر جو اس پر یقین رکھتے ہیں!!

وہ ملک جہاں پیٹرول تین روپے فی لیٹر ہے

پاکستان میں پیٹرول دن بدن مہنگا ہورہا ہے دیکھا جاۓ تو پاکستان میں اس وقت ایک لٹر پٹرول کی قیمت 111 روپے 90 پیسے ہے

شہریوں کو سستا پیٹرول فراہم کرنے والے ممالک میں جنوبی امریکہ کا ملک وینزویلا سب سے پہلےجبکہ دوسرے نمبر پر ایران ہے سب سے زیادہ تیل پیدا کرنے والا ملک سعودی عرب اس فہرست میں 16 ویں نمبر پر ہےاورپاکستان کا نمبر 30 واں ہےتیل کی قیمتوں میں چین کا نمبر 87 واں ہے

جنوبی امریکہ کے ملک وینزویلا میں ایک لٹر پٹرول کی قیمت صرف تین روپے ہے جو کہ دنیا میں سب سے کم ترین ہے۔ اس سے پہلے وینزیلا میں اب تک پیٹرول اور ڈیزل مفت تھے اور شہری مفت اپنی گاڑیوں کے ٹینک بھروایا کرتے تھے لیکن اب صدر نکولس نے ملک میں معاشی بحران کی وجہ سے تیل کی قیمتوں کا اعلان کیا ہے جس کے مطابق تیل فی لیٹر پانچ ہزار بولیوار میں ملے گا یہ پاچ ہزار بولیوار پاکستان میں صرف تین روہے کے برابر یے

تیل کی دولت سے مالا مال ہونے کے باوجود اس ملک کی بڑی آبادی خط غربت سے نیچے زندگی گزارنے پر مجبور ہے جس کی بڑی وجہ بدعنوان اور کرپٹ حکومت ہے

یہاں کے باشندے غربت کے خاتمے کے لیے غیر قانونی طریقوں سے بھی دوسرے ملکوں میں جاتے ہیں اور اپنے ملک سےجان چھڑا کر پڑوسی ملکوں میں محنت مزدوری کو ترجیح دیتے ہیں۔

یہ اک حقیقت ہے کہ دنیا میں سب سے مہنگا پٹرول ہانگ کانگ میں ہے جہاں پیٹرول فی لٹر قیمت 384 روپے ہے جبکہ ایران میں فی لٹر پٹرول نو روپے ساڑھے 62 پیسے میں فروخت ہوتا ہے اور سعودی عرب میں ایک لٹر پٹرول کی قیمت 81 روپے 96 پیسے ہے روس پٹرول کی 102 روپے 26 پیسے فی لٹر قیمت کے ساتھ 26 ویں نمبر پر ہے

اپنے شہریوں کو مہنگا ترین پٹرول فروخت کرنے میں یورپی ممالک سب سے آگے ہیں۔ ہانگ کانگ اور وسطی افریقی جمہوریہ سے اوپر اکثر یورپی ممالک میں تیل کی قیمتں بہت زیادہ ہیں

وہ ملک جہاں سب سے طویل ترین روزہ رکھاجائے گا

دنیا بھر میں رمضان المبارک کا ​آغاز ہو گیا ہے جبکہ رمضان المبارک کا آغاز پاکستان میں کل ہوگاسعودی عرب سمیت مختلف ممالک میں آج سے آغاز ہوچکا ہے

کیا آپکو معلوم ہے کہ وہ کونسا ملک ہوگا جہاں سب سے طویل ترین روزہ 23 گھنٹے 5 منٹ کا ہو گا اور کس مقام پر رکھاجاۓ گا جبکہ سب سے مختصر ترین روزہ کہاں ہو گا ؟

رواں سال دنیا کا طویل ترین روزہ فن لینڈ وہ ملک ہوگا جہاں روزہ کا دورانیہ 23 گھنٹے 5 منٹ کا ہوگا سویڈن ، ناروے اور روس میں 20 گھنٹے 45 منٹ کا روزہ ہو گا اس کے بعد گرین لینڈ کے شہر نوک میں 19گھنٹے 57سیکنڈ کا ہوگا

مختصر ترین روزہ

سب سے مختصر ترین روزہ نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں 11گھنٹے 20منٹ کا ہوگا اور پاکستان میں روزے کا دورانیہ 14گھنٹوں سے زائد ہو گا

البتہ افریقی ملک یوگنڈا وہ واحد ملک ہے جہاں ماہ صیام کے اوقات کار تبدیل نہیں ہوتے وہاں ہر سال مسلمان بارہ گھنٹے کا روزہ رکھتے ہیں
کیونکہ یہ ملک خط استوا پر واقع ہے جہاں مسلمان کے دن اور رات میں کوئ فرق نہیں آتا
اس ملک کی آبادی چار کروڑ ہے جبکہ ایک کروڑ مسلمان ہیں

کھدائی کے دوران زمین سے سونا نکل آیا

بھارتی میڈیا کے مطابق بھارت میں کھدائی کے دوران زمین سے سونا نکل آیا

بتایا گیا ہے کہ بھارتی ریاست تلنگانہ کے ضلع جھنگاؤں کے رہائشی نے ایک ماہ قبل ریئل اسٹیٹ کے منصوبے سے گیارہ ایکڑ اراضی خریدی تھی۔ جس پر عمارت کی تعمیر کی جارہی تھی جب کھدائی کی گئی تو مزدوروں کے ہاتھ بھاری خزانہ لگ گیا جس سے ان کی خوشی کا ٹھکانہ نہ رہا

تفصیلات کے مطابق عمارت کی تعمیر کے لیے خریدار نے جدید مشینوں کا استعمال کیا اور جدید مشینوں کے ذریعے زمین کی صفائی اور خدائی کا کام شروع کروایا

کھدائی کے دوران کام کرنے والے مزدوروں کو ایک گڑھا ملا گڑھے کو توڑا گیا تو اس میں سے پانچ کلو سونے پر مشتمل خزانہ نکل آیا

بتایا جارہا ہے کہ اس خزانے میں تقریبا 18 پونڈ سونے کے زیورات ،سکے، طلائی زیورات اور دو کلو چاندی کے زیورات موجود تھے۔ اس کے علاوہ دیگر قیمتی اشیاء بھی شامل تھیں یہ بھی کہا گیا ہے کہ خزانے میں اشرفیاں،بھاری مقدار میں سونا اور انگریز دور کا اسلحہ شامل ہے تاہم انتظامیہ نے اس معاملے کو خفیہ رکھنے کی کوشش کی ہے

خزانہ نکلا تو اطلاع آگ کی طرح پھیل گئی جس کے بعد لوگوں کی بڑی تعداد خزانہ دیکھنے پہنچ گئی۔پولیس اور محکمہ مال کے عہدیدار اطلاع ملتے ہی پہنچ گئےاور خزانے کو اپنے قبضے میں لے لیا۔

اس سے قبل ملتان میں کھدائی کے دوران خزانے کی بڑی مقدار برآمد ہوئی کھدائی کے دوران 80 سال سے بند پڑے رہنے والے مال خانے سے اشرفیاں،بھاری مقدار میں سونا اور انگریز دور کا اسلحہ ملا۔

اطلاعات کے مطابق 80 سال پرانے ،مال خزانے کی جگہ پر نئی عدالتوں کی تعمیر کے لیے کھدائی کا آغاز کیا گیا تو وہاں سے سونے کے سکے اور دیگر اشیاء برآمد ہوئیں۔

آب زم زم کنویں سے متعلق اہم حقائق

حج ، عمرے یا طواف کعبہ کے مقصد کے لیےلاکھوں لوگ شہر امن کی جانب کھنچتے ہیں اور سیر ہو کر آب زم زم پیتے ہیں بھر بھر کر یہ مقدس بوتلیں اپنے ساتھ بھی لے کر جاتے ہیں اسے پینے میں اتنی تاثیر ہے کہ تھکن فوری دور ہوتی ہے کہا جاتا ہے کہ آب زم زم جسا ذائقہ اور اثر دنیا کے بہترین منزل واٹر میں بھی نہیں ہے

اسلامی تاریخ کے مطالعہ سے پتہ چلتا ہے آج سے چار ہزارقبل حضرت ابراہیم اپنی زوجہ ہاجرہ اور بیٹے حضرت اسماعیل کو اس بے نام وادی میں تن تنہا چھوڑ کر چلے گئے تھے شیر خوار بچہ پیاس سے نڈھال تھا لیکن پانی کا نشان تک نہ تھا جن کی برکت کی بدولت ی چشمہ پھوٹا اور آج تک جاری ہے

زم زم کی دوبارہ کھدوائی حضرت عبدالمطلب نے کروائی اس کے بعد سے اب تک کوئی تبدیلی نہیں آئی . آب زم زم کے کنویں کی لمبائی اٹھارہ فٹ , چوڑائی چودہ فٹ جبکہ گہرائی تقریبا 5 فٹ ہے

آبِ زم زم کی کچھ امتیازی خصوصیات یہ ہیں

1-یہ کنواں کبھی خشک نہیں ہوتا

2- اس کا ذائقہ آج تک جوں کا توں ہے

3-٭ اس کی نوشیدگی بھی ایک مسلمہ حقیقت ہے۔ آبِ زم زم پینے کی وجہ سے کبھی کوئی بیمار نہیں پڑا اس کے برعکس اسے پینے والا ہمیشہ تازہ دم رہتا ہے

4-٭ وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ کسی بھی کنویں کے پانی کا ذائقہ تبدیل ہو جاتا ہے جبکہ آبِ زم زم کے ساتھ ایسا کبھی نہیں ہوا۔

متعدد تحقیقات کرنے بعد یہ معلوم ہوا ہے کہ آب زم زم کے خواص تبدیل کرنا ممکن ہی نہیں ہے ۔ عام پانی کے ہزاروں قطروں میں آب زم زم کا یک قطرہ ملانے سے اس پانی کو آب زم زم بنا دیتا ہے

کالا پینتھر جس کے بارے میں لوگ بہت کم جانتے ہیں

کالا پینتھرجو سیاہ چیتا بھی کہلاتا ہے جوکہ حیاتیات کی شاخ فی لائن کے ایک بڑے جانور کو کہا جاتا ہے۔

تیندوا، چیتا اور جیگوار ایک ہی جانوروں کی ایک ہی کلاس سے تعلق رکھتے ہیں جسکو فیلائن کہتے ہیں یہ بلی کی نوع جیسا خاندان ہے اور اس میں تقریبا 37 جانور شامل ہیں جس میں پوما، لیوپورڈ، شیر، ببر شیر، لائنکس اور پالتو بلی جیسے جانور بھی شامل ہیں۔

سیاہ چیتے کی خاص بات اسکی جلد پر پڑے کالے دھبے ہیں جو جلد کی سیاہ رنگ سے مماثل ہوتے اور زرا گہری نگاہ سے نظر آتے ہیں۔ مکمل سیاہ ترین فر کی کوٹ کا ان جانداروں میں ملنا ایک نادر موقع ہی ہوتا ہے، یعنی ایسے پینتھر بہت کم ہیں جنکی کھال یا فر مکمل طور سیاہ رنگت کی حامل ہو

ایک جیگوار اور لیوپرڈ میں یہ میلانن کی زیادتی ایک جینیاتی تغیر کے سبب ہوتی ہے اور ایسے سیاہ تیندوے ، کل تیندوے کی نسل کا قریبا چھ فیصدی حصہ قرار پاتے ہیں۔ 

لیوپرڈ، جسکا حیاتیاتی نام ” پینتھرا پرڈس ہے اور اسکی نسل وہی ہے جو کالے پینتھر کی ہے اور یہ جانور شیر (ٹائیگر)، ببر شیر اور جیگوار سے ملتا جلتا ہے۔

لیوپرڈ کو موجودہ دور میں “چیتا” کہا جاتا ہے ، یہ نسل جسکو پرانے زمانے میں یہ خیال کیا جاتا تھا کہ یہ شیر اور ایک بلی کی نسل کے جانور “پرڈ” کی مخلوط نسل ہے۔ اسی لیے اسکا نام لیو پرڈ Leopard رکھا گیا، لیو کا مطلب “شیر” ہوتا ہے۔ 

یہ ایک غیر محفوظ، بقا کے خطرے سے دوچار جانور ہے جسکی نوع کی آبادی کے کل جانور پوری دنیا میں قریبا ایک لاکھ کے لگ بھگ ہی رہ گئے ہیں۔ اسکا شکار اب ممنوع قرار دیا جاچکا ہے۔

انگلینڈ میں مشہور ریاضی دان کے نام پر نوٹ جاری

ذرائع کے مطابق انگلینڈ میں بیسویں صدی کے مشہور ریاضی ایلن ٹیورنگ کے نام پر پچاس پاؤنڈ کا نوٹس جاری کر دیاگیا۔

تفصیلات کے مطابق برطانوی گورنمنٹ کی جانب سے بیسویں صدی کے مشہور ریاضی دان، کمپیوٹر سائنس ،فلسفے اور کرپٹولوجی کے ماہر ایلن ٹیورنگ کے یاد میں پچاس پاؤنڈ کا یادگاری نوٹس جاری کر دیا گیاہے۔ اس نوٹ کا اجراء23 جون یعنی ایلن ٹیورنگ کی سالگرہ کےدن کیا جائے گا۔

ایلن ٹیورنگ کے نام بنیادی نوعیت کی بہت سی ایجادات منسلک ہیں۔ انہوں نےمصنوعی ذہن کے لیے مشہور زمانہ کا ٹیورنگ ٹیسٹ واضح کیا۔ دوسری جنگ عظیم کے دوران بنائی جانے والی اینگمامشین کی ایجاد بھی انہی کے نام ہے۔ اس مشین نے جرمن بحریہ کا خوفیاپیغام رسانی کاراز فاش کیا۔ مانچسٹر یونیورسٹی میں سب سے پہلے کمپیوٹر کو فنکشنل کرنے میں ایلن ٹیورنگ کا ہی ہاتھ ہے۔

برطانیہ کی جانب سے جاری کیے جانے والے پچاس پاؤنڈ کے نوٹ میں ایلن ٹیورنگ کے دستخط بھی ثبت ہیں۔

لائبریری سے لی گئی کتاب کی انوکھی کہانی

ذرائع کے مطابق ہالینڈ کی ایک لائبریری سے لی گئی کتاب 39 سال بعدواپس جمع کروا دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق ہالینڈ کی ڈچ لائبریری سے 1981 میں لی جانے والی کتاب حیرت انگیز طور پر 39 برس بعد واپس لائبریری میں جمع کروا دی گئی

کتاب کے واپس آنے کے بعد لائبریری کے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے ایک پوسٹ کی گئی ہے جس کے مطابق کبھی کبھار آپ کو اپنی آنکھوں پر یقین نہیں رہتا۔ کتاب کی اجراء کی جانے والی تاریخ کو پڑھ کر نظر انداز کرنا خاصا مشکل کام ہے۔

لائبریری حکام کی جانب سے کہنا تھا کہ جب انہوں نے کتاب کی جاری کی جانے والی تاریخ کو دیکھا اس پر یقین کرنا بہت مشکل تھا۔ مزید یہ کہ کتاب کو ڈھونڈنے کی بہت بار کوشش کی گئی لیکن لائبریری کارڈپر موجود غلط ایڈریس کی وجہ سے یہ ممکن نہ ہو سکا۔