ہزارہ برادری آج تدفین کرے تو آج ہی کوئٹہ آکر لواحقین سے ملاقات کروں گا ، وزیراعظم عمران خاں

اسلام آباد میں اک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نےکہا کہ ہمارے ملک میں شاید ہزارہ برادری پر بہت ظلم ہوۓ ۔۔قتل ہوۓ پاکستان کی کسی اور کمیونٹی پر ایسا ظلم نہیں ہوا مجھے سب سے زیادہ پتا ہے کہ ان کے ساتھ کیسا ظلم ہوا۔

عمران خان نے کہا کہ مچھ واقعے کے بعد وزیر داخلہ اور پھر دو وفاقی وزرا کو کوئٹہ بھیجا، ہزارہ کمیونٹی کو یہ بتانے کے لیے بھیجا کہ یہ حکومت ان کے ساتھ کھڑی ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ہم مظاہرین کے تمام مطالبات مان چکےہیں لیکن ان کا ایک مطالبہ ہے کہ وزیرعظم آئے تو شہدا کو دفنائیں گے، ان کو کہا ہےکہ کسی بھی ملک کے وزیراعظم کو ایسے بلیک میل نہیں کیا جاسکتا، اس طرح ہر کوئی بلیک میل کرے گا، خاص طور پر ڈاکوؤں کا ایک ٹولہ ڈھائی سال سے بلیک میل کررہا ہے۔ کہ حکومت گرا دیں گے

عمران خان نے مزید کہا کہ دھرنے کے شرکا اگر آج تدفین کردیں تو آج ہی کوئٹہ آجاؤں گا، ہم نے سارے مطالبات مان لیے لیکن یہ نہیں کرسکتے کہ شرط لگائیں، پہلے دفنائیں، اگر آج دفناتے ہیں تو گارنٹی دیتا ہوں آج ہی ملوں گا

مشہور کمپنی ٰ سازگار ٰ کا پاکستان میں کاریں تیار کرنے کا اعلان ، ہیچ بیک اور سیڈان ورژن شامل

سازگار کمپنی نے پاکستان میں کاریں تیار کرنے کا اعلان کردیا، کمپنی مارکیٹ میں کراس اوور ایکس 25 اور آف روڈر ایس یو وی بی جے40 پلس لانے کا منصوبہ رکھتی ہے، گاڑیوں میں ہیچ بیک اور سیڈان ورژن شامل ہوں گے۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان میں رکشے تیار کرنے کے حوالے سے مشہور کمپنی سازگار نے اب کاریں تیار کرنے کا بھی اعلان کردیا ہے، بتایا گیا ہے کہ سازگار کمپنی پاکستان میں رکشے تیار ہی نہیں کرتی بلکہ جاپان سمیت 20 ممالک کو رکشے برآمد بھی کرنے کا اعزاز رکھتی ہے۔
سازگارکمپنی گاڑیوں کی تیاری کیلئے اسمبلی لائن کی تکمیل کے مراحل میں ہے۔ اس کے بعد کمپنی اپنی گاڑیوں کی آزمائشی بنیادوں پرتیاری جلد شروع کردے گی۔

ذرائع کا کہنا ہےکہ گاڑیوں کی تیاری شروع کے بعد آئندہ 3 ماہ میں مارکیٹ میں گاڑیاں دستیاب ہوجائیں گی۔گاڑیوں کی قیمت کو دیکھا جائے تو 20 سے 60 لاکھ روپے مالیت کی گاڑیاں متعارف کروائی جائیں گی، ان گاڑیوں میں ہیچ بیک، سیڈان، کروس اوور اور ایس یو وی گاڑیاں شامل ہوں گی۔

اسی طرح اس سے قبل پاکستان کی سب سے سستی گاڑی متعارف کروا دی ہیں، کراون گروپ نامی پاکستانی کمپنی نے محض 4 لاکھ روپے کی قیمت میں سستی ترین الیکٹرک کار پیش کر دی، آنے والے دنوں میں مزید سستی الیکٹرک گاڑیاں متعارف کروائے جانے کا امکان۔ تفصیلات کے مطابق حکومت کی جانب سے ملک کی پہلی الیکٹرک وہیکل پالیسی مرتب کی جا رہی ہے جس کا جلد نفاذ بھی کر دیا جائے گا۔
حکومت کے اس فیصلے کے باعث ملک میں جلد سستی ترین الیکٹرک گاڑیاں متعارف کروائے جانے کا امکان ہے۔ جبکہ اس سلسلے کا آغاز بھی ہو گیا ہے۔ کراچی میں کراون گروپ نامی پاکستانی کمپنی پاکستان کی سب سے سستی ترین الیکٹرک کار متعارف کروائی ہے۔

نواز شریف پاکستانی ہیں وہ جب چاہے یہاں آ اور جا سکتے ہیں ، کیپٹن (ر) صفدر

ن لیگ کی نائب صدر مریم نواز کے شوہر کیپٹن (ر) صفدر نے ضلع کچہری کےباہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نواز شریف پاکستانی ہیں وہ جب چاہے یہاں آ اور جا سکتے ہیں ، میں نے مولانا فضل الرحمان کا ہاتھ اس لیے چوما کہ انہوں نے ختم نبوت کی بات کی۔

کیپٹن (ر) صفدر نے کہا کہ شریف خاندان گرفتاریوں سے گھبرانے والا نہیں ہے، میاں شریف نے بھی خود کو گرفتاری کے لیے پیش کیا تھا، یہ حکومت ایک دو ماہ میں ختم ہو جائے گی، اب نیب کو جرات نہیں ہو رہی کہ مولانا فضل الرحمان کو نوٹس بھیجے

انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کو تو یقین ہی نہیں تھا کہ 2018 میں انہیں حکومت مل جائے گی، یہ رات کو سوئے تھے ان کو جگا کر بتایا کہ آپ کی حکومت آگئی ہے، یہ حکومت ایسی چل رہی ہے جیسے موت کے کنویں میں موٹر سائیکل چل رہی ہوتی ہے۔

کیپٹن (ر) صفدر کا کہنا تھا کہ حکومت کہہ رہی ہے کہ پی ڈی ایم کے غبارے سے ہوا نکل گئی، غبارہ ہمارا ہے ہم ہوا بھریں یا نکالیں، یہ تو وقت بتائے گا کہ کس کے مشکیزے سے ہوا نکلتی ہے۔

پاکستان کا ملٹی راکٹ لانچ ‘فتح 1 ‘ کا کامیاب مظاہرہ : آئی اس پی آر

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق پاکستان نے مقامی طور پر تیار کیے گئے ملٹی راکٹ لانچ ‘فتح 1’ کا کامیاب مظاہرہ کیا جو روایتی ہتھیاروں کو 140 کلو میٹر تک لے جانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق یہ تجربہ پاک آرمی کی دشمن کے علاقے میں ہدف کو کامیابی کے ساتھ نشانہ بنانے کی صلاحیت فراہم کرے گا۔

سانحہ مچھ : بلاول اور مریم نواز کوئٹہ پہنچ گۓ ، دھرنے کے شرکاء سے اظہارِ یک جہتی

بلاول اور مریم نواز سانحہ مچھ کے خلاف دھرنے میں کوئٹہ پہنچ گۓ دھرنے کے شرکاء سے خطاب میں بلاول بھٹو نے کہا کہ ریاست نے دہشتگردی کی کمر توڑنے اور نیشنل ایکشن پلان پر علمدرآمد کا کہا تھا، ریاست سے اپیل ہے کہ وطن سے محبت کرنےوالوں کو انصاف فراہم کیا جائے۔

بلاول بھٹو زرداری نے مزید کہا کہ میں اس سانحہ پر ہزارہ بہن بھائیوں کو کیا کہہ سکتاہوں، پاکستان ایسی دھرتی ہے جہاں ہمارے شہیدوں کو بھی احتجاج کرناپڑتاہے، پاکستان میں سب کچھ منہگا ہوچکا، مزدور،سیاسی کارکن ،وکلاء کا خون سستاہوچکا ، 1999سے اب تک ہمارے 2 ہزار لوگ شہید ہوچکےہیں،کسی کو انصاف نہیں ملا۔

بلاول نے کہا کہ آپ لوگ اپنے شہیدوں کےساتھ احتجاج کررہےہیں، میں بھی ایک شہیدوں کےخاندان سےہوں،ہم بھی آج تک اپنے شہیدوں کو انصاف نہیں دلاسکے، جب تک زندہ رہوں گا،یہی کوشش ہوگی ہمارے غریب عوام کو جینےدیاجائے، جو ملک میں سب سے زیادہ محب وطن ہیں وہ سامنے بیٹھے ہیں، ان لوگوں کو انصاف نہیں دلواسکےتو باقی کسی کو کیا انصاف دلوائیں گے۔

نائب صدر ن لیگ مریم نواز نے دھرنے کے شرکاء سے خطاب میں کہا کہ آپ کے پیارے آپ سے چھینے گئے، آپ پر جو قیامت ٹوٹی اس پر دلی تعزیت کرتی ہوں، پانچ دن سے دیکھ رہے ہیں،آپ کی تکلیف کااحساس ہے، جس پر گزرتی ہے وہی جانتا ہے، پوری قوم آپ کے غم میں شریک ہے۔

مریم نواز نے وزیراعظم عمران خان کے حوالے سے کہا کہ بےحسی، ناکامی کوآپ سیاست کہہ کر ٹال دیں یہ ہونے نہیں دیں گے، آپ کو یہاں آنا پڑے گا، یہ آپ سے کوئی بڑی چیز نہیں مانگ رہے، آپ تنقید کے ڈر سے نہیں آرہے،کوئی بات نہیں تھوڑی تنقید سن لیں۔

مریم نواز نے مزید کہا کہ آپ کا فرض ہے ان کے غم میں شریک ہوں، ان کا دکھ بانٹیں، اقتدارکی کرسی پربیٹھےشخص کی بےحسی پربےحدافسوس ہے، میں حکومت میں نہیں آپ کیلئے سوائے آواز اٹھانے کے کچھ نہیں کرسکتی، میں ایک ماں ہوں، بیٹی ہوں مجھے آپ کی تکلیف کا احساس ہے۔

مریم نے کہا کہ میں عمران خان سے کہتی ہوں آپ باپ ہیں، بہنوں کے بھائی ہیں، حکمران یہاں نہیں آتاتوقوم اسےکرسی پربیٹھنےکی اجازت نہیں دےگی، ہم سے جو ہوسکے گا، ضرور کریں گے، کہتےہیں ریاست ماں کی طرح ہوتی ہے،اس ماں نےحق ادانہیں کیا،آپ ذمہ داری میں ناکام ہیں، یہ حادثہ پھر سے پیش آگیا ہے،آپ چل کر آئیں ، ان کی داد رسی کریں، عمران خان سے کہنا چاہتی ہوں یہ لاشیں رکھ کر آپ کے منتظر ہیں،کیا ان لاشوں سے آپ کی انا بڑی ہے، ریاست کی ذمہ داری ہےاپناحق اداکرے،آپ کےزخموں پر مرہم رکھے۔

عثمان بزدار کورونا سے صحتیاب ہوگۓ ہیں ان کو باداموں والا دودھ پلائیں ، عظمٰی بخاری

مسلم لیگ(ن)پنجاب کی سیکرٹری اطلاعات عظمی بخاری نے کہا ہے کہ خادمہ جی پی ڈی ایم کی فکر چھوڑیں اپنے آقا بزدار کی خدمت کریں،

عثمان بزدار کورونا سے تازہ تازہ صحتیاب ہوئے ہیں ان کو باداموں والا دودھ پلائیں، چلغوزے اور اخروٹ کھلائیں،درباری خادمہ کے خوابوں میں دن رات رجکماری اور شہزادہ ہی آتے ہیں

اپنے بیان میں انہوںنے کہاکہ محلات سیاست کا حصہ بنے والی خادمائیں ہمیشہ دربدر کی ٹھوکریں ہی کھاتی ہیں۔این آر او کا ڈرامہ بری طرح پٹ چکا ہے مارکیٹ میں کوئی نئی سیریل لائیں،این آر او کون دے رہا ہے کون لینے کی بھیک مانگ رہا ہے یہ پوری قوم جان چکی ہے،اب نوازشریف کسی قبضہ مافیا اور مہنگائی مافیا کو این آر او نہیں دینگے

وزیراعظم کو کوئی خوف ہے تو ایسی صورتحال میں جھکنا چاہیے ، مریم نواز

مسلم لیگ ن کی مرکزی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ مچھ واقعہ انتہائی افسوس ناک اور دل دہلا دینے والا ہے ریاست ماں کی طرح ہوتی ہے لیکن حکومت بے حسی کا مظاہرہ کررہی ہے وزیراعظم کو سخت سردی میں بیٹھے ورثاء کے سروں پر ہاھ رکھنا چاہیے انہوں نے کہا کہ ہزارہ برادری کے ساتھ یہ ظلم بہت پہلے سے ہوتا آیا ہے یہ قومی سانحہ ہے اس پر سیاست نہیں کرنا چاہتی لواحقین حکومت کی طرف سے دادرسی کا انتظارکررہے ہیں

وزیراعظم قوم کے باپ کی طرح ہوتا ہے انہیں وہاں جانا چاہیے تھا انہیں وزیراعظم کی کرسی پر بٹھا دیا گیا مگر قوم کا احساس نہیں ، خود نہیں جارہے اپنے وزراء اور مشیروں کو بھیج رہے ہیں

ان کا کہنا تھا کہ ہم ان کے دکھ میں برابر کے شریک ہیں، متاثرہ خاندانوں سے اپیل کروں گی کہ اپنے پیاروں کی تدفین کر دیں، مجھے امید ہے انہیں انصاف ضرور ملے گا

مسلم لیگ ن شہداء کی لاشوں پر سیاست چمکانے سے گریز کرے ، فردوس عاشق اعوان

فردوس عاشق اعوان نےاپنی ٹوئیٹ میں کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کو پاکستان کا ہر شہری عزیز ہے، مریم نواز اپنے بیانات سے ملک دشمن عناصر کو مواقع فراہم کررہی ہے۔

فردوس عاشق اعوان نے مزید کہا کہ افسوس کہ مریم نواز نے مچھ کے شہداء سے اظہار ِیکجہتی کے موقع پر بھی وزیراعظم عمران خان پر بے جا تنقید کرکے اپنا وطیرہ نہیں بدلا۔ مسلم لیگ (ن) لاشوں پر سیاست چمکانے کی پرانی عادی ہے۔ مریم نواز کوئٹہ کے شہداء کی لاشوں پراس روایت کو زندہ رکھنے سے گریز کریں۔

معاون خصوصی کامزید کہنا تھا کہ شہداء کے لواحقین مریم اور بلاول سے پی ڈی ایم کے کارکنوں میں چھپے آستینوں میں سانپ کا ضرور پوچھیں، جنہوں نے ہمیشہ انتہا پسندی اور دہشت گردی کی سوچ کو پروان چڑھانے میں کلیدی کردار ادا کیا